Kaafir hai to shamsheer pe karta hai bharosa || Dr Allama Iqbal

کافر ہے تو شمشیٖر پہ کرتا ہے بھروسا
مومن ہے تو بے تیغ بھی لڑتا ہے سپاہی

काफिर है तो शमशीर पे करता है भरोसा
मोमिन है तो बेतेग लड़ता है सिपाही

Kaafir hai to shamsheer pe karta hai bharosa
momin hai to be-tegh bhi ladta hai sipaahi

الفاظ و معنی:۔
شمشیٖر: تلوار۔ تیغ: تلوار۔

تشریح:۔
کافر یعنی اللہ کا انکار کرنے والا مقابلہ کے لیے تیر تلوار اور اسلحہ کے ڈھیر پر بھروسہ کرتا ہے، اس کے برعکس مومن اسلحہ کے ڈھیر پر نہیں بلکہ اللہ کی مدد پر بھروسہ کرکے بغیر ہتھیاروں کے بھی اسلام کے دشمنوں کا اس طرح مقابلہ کرسکتا ہے جس طرح جنگ میں ہتھیاروں سے کیا جاتا ہے۔

spot_img
1,717FansLike
248FollowersFollow
118FollowersFollow
14,200SubscribersSubscribe